الزائمر اورمسوڑھے۔۔۔ محمد شاہد

الزائمر کی علامات

محمد شاہد

جدید تحقیق کے مطابق مسوڑھوں کی بیماری پیدا کرنے والا ایک بیکٹیریا الزائمر کی بیماری کا بھی سبب بنتا ہے۔ نیشنل انسٹیٹیوٹ آف ڈینٹل اینڈ کرینیوفیشل ریسرچ کے مطابق امریکا میں 20 سے 64 برس کے 8.52 فیصد افراد کو مسوڑھوں کی بیماری پیریڈونٹیٹس (periodontists) ہے۔ مسوڑھوں کی یہ بیماری عام ہے اور اس کے بہت سے منفی اثرات پڑ سکتے ہیں۔ اس سے نہ صرف دانتوں کا نقصان ہوسکتا ہے بلکہ کینسر کا خطرہ بھی بڑھ جاتا ہے۔

اب ایسے شواہد ملے ہیں جن کے مطابق پیریڈونٹیٹس پیدا کرنے والا ایک بیکٹیریا دماغ میں وہ زہریلی پروٹینز جمع کرنے کا سبب بنتا ہے، جن کے بارے میں سائنس دانوں کا خیال ہے کہ ان سے الزائمر پیدا ہوتا ہے۔ اس سلسلے میں بیکٹیریا پی جنجیوالس (P. gingivalis) پر توجہ مرکوز کی گئی۔ یہ بیکٹیریا الزائمر کے مریضوں کے دماغ میں بھی پایا جاتا ہے۔ چوہوں پر تحقیق سے معلوم ہوا کہ اس بیکٹیریا کی انفیکشن سے دماغ میں بِیٹا ایمی لائیڈ کی مقدار بڑھ جاتی ہے اور یہ اضافی مقدار الزائمر کی نشانی ہے۔ اس کے نتیجے میں زہریلی پروٹین جمع ہونے لگتی ہے جس سے دماغ کے خلیوں کے درمیان ابلاغ متاثر ہوتا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.