امریکی ٹیچر کا اپنے شاگرد کیساتھ سو مرتبہ ریپ

rape

امریکی ریاست مشیگن سے تعلق رکھنے والی ایک خاتون استاد کے خلاف اپنے شاگرد کے ساتھ 100 سے زائد مرتبہ جنسی زیادتی کرنے کے الزام میں ٹرائل کا آغاز ہوگیا۔

خبررساں ادارے ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق خصوصی تعلیم فراہم کرنے والی 38 سالہ شادی شدہ خاتون ہیتھر ونفیلڈ کے خلاف اس وقت مقدمہ درج کرنے کا حکم دیا گیا جب ان کے سابق شاگرد نے الزام لگایا کہ ان کو 100 سے زائد مرتبہ جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا اور اس کا آغاز تب سے ہوا جب وہ 11 سال کے تھے۔

ہیتھر ونفیلڈ کو 2016 میں شروع ہونے والی ایک طویل تفتیش کی روشنی میں جنوری میں حراست لیا گیا، یہ تحقیق اس وقت شروع ہوئی تھی جب وہ الپینا میں تھنڈر بے جونیئر ہائی اسکول میں استاد کے فرائض انجام دے رہی تھیں۔

امریکی خاتون استاد کے خلاف 2 طرح کے چارجز لگائے گئے ہیں، جس میں نابالغ لڑکے سے جنسی زیادتی، اسے غیر معمولی مقاصد کے لیے استعمال کرنے اور مجرمانہ مقاصد کے لیے کمپیوٹر کا استعمال کرنے کے چارجز شامل ہیں۔

38 سالہ خاتون کو درپیش قانونی مشکلات کے باوجود حالیہ سوشل میڈیا پوسٹ یہ اشارہ کرتی ہے کہ ہیتھر ونفیلڈر ابھی تک شادی شدہ ہیں اور اپنے شوہر اور بچوں کے ہمراہ رہ رہی ہیں۔ تاہم اگر ان پر لگائے گئے الزامات پرانہیں مجرم قرار دیا جاتا ہے تو ہیتھر ونفیلڈ کو پوری زندگی جیل میں گزارنا پڑسکتی ہے۔

رپورٹ میں الپینا نیوز کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ گزشتہ ہفتے شروع ہونے والے ابتدائی سماعت کے 3 روز میں ہیتھر ونفیلڈ پر الزام لگانے والے 14 سالہ لڑکے نے گواہی دی کہ بدسلوکی کا آغاز اس وقت سے ہوا جب وہ 11 سال کے تھے اور 3 سال کے دوران الپینا کے اطراف ہوٹل کے کمروں میں انہیں 100 سے زائد مرتبہ جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.