بھارتی میوزک ڈائریکٹرانو ملک کے گرد گھیرا تنگ

bollywood actress

ممبئی( شوبز رپورٹ) بھارت کے میگا میوزک کمپوزر اور گلوکار 57 سالہ انو ملک پر گزشتہ ہفتے 2 گلوکاراؤں شویتا پنڈت اور سونا مہاپترا کی جانب سے جنسی طور پر ہراساں کرنے کے الزامات لگائے گئے تھے۔ اگرچہ انو ملک نے خود پر لگائے گئے الزامات کو مسترد کردیا تھا، تاہم گلوکاراؤں کا دعویٰ تھا کہ میوزک کمپوزر کی جنسی حرکتوں سے پوری انڈسٹری واقف ہے۔

شویتا پنڈٹ اور سونا مہاپترا کے بعد اب مزید 2 گلوکاراؤں نے میوزک کمپوزر پر جنسی طور پر ہراساں کرنے کے الزامات عائد کرتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ انو ملک نے انہیں اس وقت نازیبا رویے کا نشانہ بنایا جب وہ کیریئر کے ابتدائی دور میں تھیں۔

‘مڈ ڈے’ نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ انو ملک پر جنسی طور پر ہراساں کرنے کا الزام لگانے والی 2 گلوکاراؤں نے اپنی شناخت ظاہر نہیں کی، تاہم انہوں نے دعویٰ کیا کہ انہیں بھی گلوکار نے جنسی طور پر ہراساں کیا۔

انو ملک پر الزام لگانے والی ایک گلوکارہ نے دعویٰ کیا کہ موسیقار نے انہیں 1990 میں اپنے ہی گھر میں ‘ریپ’ کا نشانہ بنانے کی کوشش کی۔ گلوکارہ نے اس وقت کو یاد کرتے ہوئے بتایا کہ انو ملک نے پہلے تو انہیں ان کی دوست کے ساتھ اپنے گھر بلایا تھا اور پہلی دفعہ میں انہوں نے اپنی اہلیہ اور بیٹٰی سے ملاقات بھی کروائی۔

گلوکارہ کے مطابق تاہم دوسری بار انو ملک نے انہیں اس وقت گھر بلایا جب ان کی دوست ممبئی سے باہر تھیں،اس لیے وہ موسیقار سے تنہا ملنے گئیں،لیکن وہاں پہنچنے کے بعد انہیں پتہ چلا کہ ان کی اہلیہ اور بچی بھی گھر پر نہیں۔

Author: admin

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.