بھارت میں مسلمان لڑکا بنا ہندوؤں کا بھگوان

sohail khan

مدھیاپردیش (ٹاپ نیوز) بھارتی ریاست مدھیا پردیش کے ایک گاؤں کا رہائشی 13 سالہ مسلمان بچہ اس وقت تمام ہندوؤں کی توجہ کا مرکز بنا ہوا ہے اور لوگ اسے دور درازعلاقوں سے دیکھنےاوراپنی مرادیں لے کر آتے ہیں۔ 13 سالہ مسلمان بچے کا نام سہیل خان ہے اوراس کی کمر پر قدرتی طور پر بالوں کا ایک گچھا بنا ہوا جو روز بروز بڑھتا جارہا ہے۔اسی وجہ سےہندو اس بچے کو اپنے بھگوان ہنو مان کا دوسرا جنم مانتے ہیں۔

sohail

سہیل خان کے چاہنے والوں کا تانتا بندھا رہتا ہے۔ہندو اپنی مرادیں پوری کرنے کے لئے بچے سے دعائیں کراتے ہیں جبکہ سہیل خان کو مختلف قسم کے تحائف بھی دیئے جا رہے ہیں جن میں پھلوں کی ٹوکریاں اور نقدی شامل ہے۔ سہیل خان کے گاؤں کے افراد نے اس کا نام بجرنگی بھائی رکھ دیا ہے جبکہ جس سکول میں بچہ زیرِتعلیم ہے وہاں بھی اس کا منفرد مقام ہے۔ اساتذہ سمیت تمام بچے اسے عزت کی نگاہ سے دیکھتے ہیں اور بچے کے ساتھ بدتمیزی یا ڈانٹ سے گریز کیا جاتاہے ۔
دوسری جانب مسلم بچے سہیل خان کا کہنا ہے کہ کمر پر بالوں کی وجہ سے جو عزت ملتی ہے بہت اچھا لگتا ہے اس لئے میں کبھی بھی اس دم کو کاٹنا نہیں چاہتا۔

Author: admin

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.