دل کی بیماریوں سے نجات کا آسان طریقہ

heart disease

ہر تیسرا شخص دل کے ہاتھوں مجبور ہے۔ کسی کا بلڈ پریشر بڑھ جاتا ہے تو کسی کو کم۔ کسی کویہ فکر لاحق ہے کہ کہیں اس کا دل بیٹھ نہ جائے۔ کہیں اس کے دل کی دھڑکن بند نہ ہو جائے۔اگر آپ ان تمام فکروں سے آزاد ہونا چاہتے ہیں تو سخت ورزش کی بجائے بس اپنے جسمانی طور پر اپنی سرگرمیوں کا دورانیہ بڑھا دیں جس سے امراض قلب کا خطرہ 22 فیصد تک کم ہوجاتا ہے۔

یہ بات امریکا میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آئی۔ کیلیفورنیا یونیورسٹی کی تحقیق میں بتایا گیا کہ ہلکی پھلکی ورزش بھی ہارٹ اٹیک سے موت کا خطرہ 42 فیصد تک کم کرنے کے لیے کافی ہے۔

تحقیق میں دریافت کیا گیا کہ ہلکی پھلکی جسمانی سرگرمیاں یعنی روزمرہ کی مصروفیات جیسے چہل قدمی، لباس پہننا، برتن دھونا، سائیکل چلانا یا سیڑھیاں چڑھنا وغیرہ دل کی صحت کو بہتر بناتی ہیں۔

اس تحقیق کے دوران 6 ہزار صحت مند خواتین کے ڈیٹا کا تجزیہ کیا گیا جس کے دوران ایک ہفتے تک فٹنس ٹریکرز انہیں پہنائے گئے۔ اس کے بعد 5 سال تک ان کی صحت کا جائزہ لیا گیا، جس کے دوران 670 سے زائد خواتین میں امراض قلب یا خون کی شریانوں کے دیگر امراض سامنے آئے۔

محققین نے دریافت کیا کہ روزانہ 5 سے 10 گھنٹے تک جسمانی طور پر مصروف رہنا دل کی صحت کو بہتر بناتا ہے۔ چونکہ سب کے لیے پانچ گھنٹے تک مصروف رہنا ممکن نہیں تو جس حد تک ممکن ہو جسمانی سرگرمیاں بڑھا دینا بھی امراض قلب کو دور رکھنے میں مدد دے سکتا ہے.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.