وہ ایک درندہ تھا ۔۔شاکرہ نندنی

ڈاکٹر شاکرہ نندنی

وہ ایک درندہ تھا

 انسان کے روپ میں ایک بھیڑیا

اپنے دوست کی جس چھ سالہ بیٹی پر اس کی بری نظر تھی

 وہ اس کی بیٹیوں سے بھی کہیں چھوٹی ہوتی

 اگر وقت پر اس نے شادی کر لی ہوتی  

اس کو وہ بہلا پُھسلا پر جس پارک میں لے آیا تھا

 وہ گرمیوں کی اس چلچلاتی دوپہر میں ویران پڑا ہوا تھا

جب بچی کی ماں اسے ڈھونڈتی ہوئی اس تک پہنچی

 تو وہ ایک ہی بات بار بار پوچھتی، ہوئی بے ہوش ہو گئی ”

 امی انکل کو کیا ہو گیا تھا

انہوں نے مجھے چوٹ کیوں لگائی ” 

تعارف ڈاکٹر شاکرہ نندنی

ڈاکٹر شاکرہ نندنی لاہور میں پیدا ہوئی تھیں اِن کے والد کا تعلق جیسور بنگلہ دیش (سابق مشرقی پاکستان) سے تھا اور والدہ بنگلور انڈیا سے ہجرت کرکے پاکستان آئیں تھیں اور پیشے سے نرس تھیں شوہر کے انتقال کے بعد وہ شاکرہ کو ساتھ لے کر وہ روس چلی گئیں تھیں۔شاکرہ نے تعلیم روس اور فلپائین میں حاصل کی۔ سنہ 2007 میں پرتگال سے اپنے کیرئیر کا آغاز بطور استاد کیا، اس کے بعد چیک ری پبلک میں ماڈلنگ کے ایک ادارے سے بطور انسٹرکٹر وابستہ رہیں۔ حال ہی میں انہوں نے سویڈن سے ڈانس اور موسیقی میں ڈاکٹریٹ کی ڈگری حاصل کی ہے۔ اور اب ایک ماڈل ایجنسی، پُرتگال میں ڈپٹی ڈائیریکٹر کے عہدے پر فائز ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.