ڈانس تومعذوری میں بھی کیا جاسکتا ہے:معذورڈانسرڈانٹکر

disable dancer

لندن (ٹاپ نیوز) اگرہمت اور حوصلے بلند ہوں تو دنیا میں کوئی کام مشکل نہیں ہوتا۔ جس کو ثابت کر دکھایا لندن کی ’کینڈوکو‘ نامی ڈانس کمپنی نے۔ یہ کمپنی سالوں سے معذور اور غیر معذور افراد کو ڈانس سکھاتی آرہی ہے۔
یہ ڈانس کمپنی 1991 میں سیلیسٹ ڈانٹکر نامی ڈانسر نے قائم کی۔ 1973 میں ایک پرفارمنس کے دوران وہ گر کر زخمی ہوگئیں تھیں جس کے بعد وہ معذور ہوگئیں تاہم انہوں نے ہمت نہ ہاری اور ڈانس کرنا نہیں چھوڑا۔ disable dancer 1

اپنی معذوری کے بعد انہوں نے اس ڈانس کمپنی کو قائم کرنے کا فیصلہ کیا جہاں ہر کوئی ڈانس سیکھ سکتا ہے۔اس کمپنی کا مقصد معذوری کے خیال کو چیلنج کرنا ہے، تاکہ وہ افراد جو چلنے پھرنے کی صلاحیت سے محروم ہے وہ اپنے ٹیلنٹ کو دنیا کے سامنے لاسکیں۔

disable dancer2

Author: admin

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.