isma tariq columnist

دنیا نے بھی عجیب رسم باندھی ہے مار کے کہتی ہے کاش اور جی لیتا جو زندہ ہیں تو قدم قدم کانٹے بچھاتی ہے گر مر جائیں تو پھولوں کے ہار پہناتی ہے مجھے ڈسنے والے تھے میرے اپنے ہی وگرنہ غیروں میں کہاں اتنا دم تھا خوشیوں کا موسمContinue Reading