imtiaz alam

بجلیاں تو گرتی بہت دیکھی تھیں، لیکن اب کی بار ’’میرا آشیاں کیوں ہو‘‘ کی کسر بھی دُور ہو گئی۔ ’’نئے پاکستان‘‘ کے جو سنہرے خواب دکھائے گئے تھے، وہ اس تیزی سے چکنا چور ہوں گے، اس کا گمان مشکل ہے۔ ’’اسٹیٹس کو‘‘ (Status quo) تو کیا ٹوٹنا تھا،Continue Reading